May 11, 2018 Pakistan News

نوازشریف کا چیئرمین نیب پردباؤ کار سرکارمیں مداخلت قرار

QUETTA: Chief Justice of Pakistan (CJP) Justice Mian Saqib Nisar said on Friday that the our existence is impossible without the state institutions and should not consider them as enemies as he took suo motu notice of the Hazara killings in Quetta because it is akin toWe do not have words to condemn the incidents of Hazara’s killings,” a two-member bench headed by the chief justice and comprising Justice Ijazul Ahsan said during a hearing into the suo motu notice in the Supreme Court’s Quetta Registry.For me the targeted killings of the Hazara community in Quetta is ethnic cleansing and thus I had to take suo motu,” the CJP explained. Apprising the court, the counsel for the Hazara community, Advocate Iftikhar Ali, said, "We are facing a personal and financial loss.Members of the Hazara community are not given admission to universities and people have sold their businesses," the counsel added. Ali further said, "Some members of the community have been forced to migrate to Australia." The Hazara community’s counsel further told the court, "Security from 15 of our leaders has been withdrawn.However, Quetta DIG denied taking back the security. To this, Justice Nisar remarked that a committee has been formed to look into the matter. Advocate Iftikhar Ali further told the court, "Hazaras have been facing

میڈیا رپورٹس کے مطابق اپوزیشن لیڈرپنجاب اسمبلی میاں محمودالرشید نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے چیئرمین نیب پر دباؤ کو کار سرکار میں مداخلت قرار دیتے ہوئے پنجاب اسمبلی میں مذمتی قرار داد جمع کرا دی۔ متن میں کہا گیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کا بیان چیئرمین نیب کو ہراساں کرنے کے مترادف ہے۔ نیب آئین و قانون کے مطابق کرپشن کے خاتمے کے لیے سرگرم عمل ہے۔ یہ ایوان اس عزم کا اعادہ کرتا ہے کہ وہ نیب سمیت تمام اداروں کے ساتھ کھڑا ہے۔ قرارداد میں کرپشن کے خلاف بلا تفریق اقدامات کی بھرپور حمایت کی یقین دہائی کرائی گئی ہے۔ علاوہ ازیں پنجاب پبلک سیکرٹریٹ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے میاں محمودالرشید نے کہا کہ نواز شریف جیل بھی جائیں گے، معافی بھی مانگیں گے بس جدہ نہیں جا سکیں گے، چیف جسٹس اربوں ڈالر بھارت بجھو ا نے کے معاملے کی تحقیقات کیلئے کمیشن تشکیل دیں، نواز شریف نیب کو دباؤ میں لیکر تحقیقات پر اثرانداز ہو رہے ہیں۔ میاں محمودالرشید نے کہا کہ پوری قوم نواز شریف کا ماضی جانتی ہے، معاہدے کرکے مکرنا، جھوٹ بولنا سب کچھ قوم کو یاد ہے، اس بار بھی نواز شریف کو اگر سزا ہوئی تو قوم کچھ مختلف نہیں دیکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کا چیئرمین نیب سے استعفیٰ کا مطالبہ مضحکہ خیز ہے، اخلاقیات کا درس دینے سے پہلے میاں صاحب بتائیں آپ پر کرپشن منی لانڈرنگ جیسے سنگین الزامات ہیں، عدالتوں میں کیس زیر سماعت اور فیصلے کے قریب ہے، کیا آپ نے قوم اور اخلاقی طور پر عہدہ چھوڑ کر خود کو تحقیقات کیلئے پیش کیا؟ انہوں نے چیف جسٹس سے نیب سمیت تمام ریاستی اداروں کو تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ نواز شریف کی جانب سے اربوں ڈالر بھارت بھجوانے کے معاملے کی تحقیقات کیلئے کمیشن تشکیل دیں تاکہ قوم کو حقائق معلوم ہو سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ نواز شریف کی پریس کانفرنس کا مقصد صرف نیب کو بھارت بجھوائی رقم کی تحقیقات سے روکنا ہے لیکن اب ایسا نہیں ہوگا کیونکہ ملک میں مک مکا والی نہیں اصل اپوزیشن تحریک انصاف کی شکل میں موجود ہے۔

Like Our Facebook Page

Latest News